— فائل فوٹو

پاکستان میوزک انڈسٹری کے عالمی شہرت یافتہ گلوکار و اداکار عاطف اسلم کا کہنا ہے کہ آج کل لوگوں کو محنت کے بغیر شہرت حاصل کرنا ہے، لوگ چاہتے تو ہیں کہ وہ کامیاب ہوں لیکن محنت نہیں کرنا چاہتے۔

مختلف سوشل میڈیا پیجز پر عاطف اسلم کے ایک انٹرویو کا کلپ وائرل ہو رہا ہے جس میں انہوں نے میوزک انڈسٹری میں آنے والے نئے فنکاروں کے حوالے سے کھل کر بات کی۔

ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جو مجھے غلط لگتا ہے تو میں اس پر سمجھوتہ نہیں کرتا، ایسے ہی اگر مجھے کسی کی شاعری میں کچھ غلط محسوس ہوتا ہے، لگتا ہے کہ کوئی ایسا لفظ ہے جو آپﷺ کی شان میں گستاخی کے مترادف ہے تو وہ بالکل غلط ہے اور اگر میں نے کبھی کسی کی لکھی ہوئی ایسی شاعری گا دی ہے اور مجھے بعد میں اس کا احساس ہوا تو میں اللہ سے معافی مانگی ہے۔

ایک اور سوال کے جوب میں انہوں نے موجودہ موسیقاروں اور گلوکاروں کے حوالے سے کہا کہ لوگوں کو محنت کے بغیر شہرت حاصل کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایسا نہیں ہے کہ ہمارے دور میں بھی آٹو ٹیونر تھا، ہمارے وقت میں بھی تھا، یہ راتوں رات کامیابی کے لیے سہارا ہے۔ اب لوگوں کو محنت نہیں کرنی، مشہور ہونا۔ اب لوگوں کو طویل عرصےکی کامیابی سے مطلب نہیں وہ چاہتے تو ہیں کہ ان کی کامیابی دائمی ہو لیکن وہ محنت کو اہمیت نہیں دیتے اور یہ نہیں سمجھتے کہ اس کے بغیر کامیابی کی مدت طویل عرصےنہیں رہے گئی۔

عاطف اسلم کے مطابق تھوڑی دیر کی شہرت زیادہ دیر نہیں چلتی لیکن یہ بھی کوئی فارمولہ نہیں، اگر یہ ہی فارمولہ ہوتا تو ہر کوئی مشہور ہوتا۔ صرف اس کی ذات ہے جسے چاہئے شہرت دے اور جسے چاہئے ذلت۔

Maqvi News #Maqvi #Maqvinews #Maqvi_news #Maqvi#News #info@maqvi.com



Source link